Menu

A+ A A-

مرگ خودی

 

خودي کي موت سے مغرب کا اندروں بے نور
خودي کي موت سے مشرق ہے مبتلائے جذام

خودي کي موت سے روح عرب ہے بے تب و تاب
بدن عراق و عجم کا ہے بے عروق و عظام

خودي کي موت سے ہندي شکستہ بالوں پر
قفس ہوا ہے حلال اور آشيانہ حرام

خودي کي موت سے پير حرم ہوا مجبور
کہ بيچ کھائے مسلماں کا جام ہ احرام

IIS Logo

Dervish Designs Online

IQBAL DEMYSTIFIED - Andriod and iOS 

          Image may contain: 2 people, text