Menu

A+ A A-

تمام عارف و عامي خودي سے بيگانہ

 

تمام    عارف و عامي خودي سے بيگانہ
کوئي بتائے يہ مسجد ہے يا کہ ميخانہ
يہ راز ہم سے چھپايا ہے مير واعظ نے
کہ خود حرم ہے چراغ حرم کا پروانہ
طلسم بے خبري، کافري و ديں داري
حديث شيخ و برہمن فسون و افسانہ
نصيب خطہ ہو يا رب وہ بندئہ درويش
کہ جس کے فقر ميں انداز ہوں کليمانہ
چھپے رہيں گے زمانے کي آنکھ سے کب تک
گہر ہيں آب ولر کے تمام يک دانہ

IIS Logo

Dervish Designs Online

IQBAL DEMYSTIFIED - Andriod and iOS 

          Image may contain: 2 people, text