Menu

A+ A A-

فقر و ملوکيت

 

فقر جنگاہ ميں بے ساز و يراق آتا ہے
ضرب کاری ہے، اگر سينے ميں ہے قلب سليم
اس کي بڑھتی ہوئی بے باکی و بے تابی سے
تازہ ہر عہد ميں ہے قصہ فرعون و کليم
اب ترا دور بھی آنے کو ہے اے فقر غيور
کھا گئی روح فرنگی کو ہوائے زروسيم

عشق و مستی نے کيا ضبط نفس مجھ پہ حرام
کہ گرہ غنچے کی کھلتی نہيں بے موج نسيم

-----------------

Transliteration

 

Faqr-o-Mulookiat


 

Faqr Jingah Mein Be-Saaz-o-Yaraak Ata Hai
Zarb Kari Hai,Agar Seene Mein Hai Qalb-e-Saleem


Iss Ki Barhti Huwi Bebaki-o-Betabi Se
Taza Har Ehad Mein Hai Qissa-e-Firon-o-Kaleem


Ab Tera Dour Bhi Ane Ko Hai Ae Faqr-e-Ghayoor
Kha Gyi Rooh-e-Farangi Ko Hawa-e-Zar-o-Seem


Ishq-o-Masti Ne Kiya Zabt-e-Nafs Mujh Pe Haram
Ke Girah Ghunche Ki Khulti Nahin Be-Mouj-e-Naseem

IIS Logo

www.DervishOnline.com

 

 

IQBAL DEMYSTIFIED - ANDROID APP