Menu

Content

Breadcrumb

A+ A A-

عشق طينت ميں فرومايہ نہيں مثل ہوس

 

عشق طينت ميں فرومايہ نہيں مثل ہوس
پر شہباز سے ممکن نہيں پرواز مگس
يوں بھي دستور گلستاں کو بدل سکتے ہيں
کہ نشيمن ہو عنادل پہ گراں مثل قفس
سفر آمادہ نہيں منتظر بانگ رحيل
ہے کہاں قافلہ موج کو پروائے جرس
گرچہ مکتب کا جواں زندہ نظر آتا ہے
مردہ ہے ، مانگ کے لايا ہے فرنگي سے نفس

پرورش دل کي اگر مد نظر ہے تجھ کو
مرد مومن کي نگاہ غلط انداز ہے بس

 

IIS Logo

www.DervishOnline.com

 

 

IQBAL DEMYSTIFIED - ANDROID APP