Menu

A+ A A-

موسيقی

 

وہ نغمہ سردي خون غزل سرا کي دليل
کہ جس کو سن کے ترا چہرہ تاب ناک نہيں
نوا کو کرتا ہے موج نفس سے زہر آلود
وہ نے نواز کہ جس کا ضمير پاک نہيں

پھرا ميں مشرق و مغرب کے لالہ زاروں ميں
کسي چمن ميں گريبان لالہ چاک نہيں