Menu

A+ A A-

مہدی

 

قوموں کی حيات ان کے تخيل پہ ہے موقوف
يہ ذوق سکھاتا ہے ادب مرغ چمن کو
مجذوب فرنگی نے بہ انداز فرنگی
مہدی کے تخيل سے کيا زندہ وطن کو
اے وہ کہ تو مہدی کے تخيل سے ہے بيزار
نوميد نہ کر آہوئے مشکيں سے ختن کو

ہو زندہ کفن پوش تو ميت اسے سمجھيں
يا چاک کريں مردک ناداں کے کفن کو؟