Menu

Content

Breadcrumb

A+ A A-

حسن و عشق

 

جس طرح ڈوبتی ہے کشتی سيمين قمر
نور خورشيد کے طوفان ميں ہنگام سحر
جسے ہو جاتا ہے گم نور کا لے کر آنچل
چاندنی رات ميں مہتاب کا ہمرنگ کنول
جلوہ طور ميں جيسے يد بيضائے کليم
موجہ نکہت گلزار ميں غنچے کی شميم
ہے ترے سيل محبت ميں يونہی دل ميرا
تو جو محفل ہے تو ہنگامۂ محفل ہوں ميں
حسن کی برق ہے تو ، عشق کا حاصل ہوں ميں
تو سحر ہے تو مرے اشک ہيں شبنم تيری
شام غربت ہوں اگر ميں تو شفق تو ميری
مرے دل ميں تری زلفوں کی پريشانی ہے
تری تصوير سے پيدا مری حيرانی ہے
حسن کامل ہے ترا ، عشق ہے کامل ميرا
ہے مرے باغ سخن کے ليے تو باد بہار
ميرے بے تاب تخيل کو ديا تو نے قرار
جب سے آباد  ترا عشق ہوا سينے ميں
نئے جوہر ہوئے پيدا مرے آئينے ميں
حسن سے عشق کی فطرت کو ہے تحريک کمال
تجھ سے سر سبز ہوئے ميری اميدوں کے نہال
قافلہ ہو گيا آسودۂ منزل ميرا

 

----------------

 

Transliteration

 

Husn-e-Ishq

Jis Tarah Doobti Hai Kishti-e-Simeen-e-Qamar
Noor-e-Khursheed Ke Toofan Mein Hangam-e-Sehar


Jaise Ho Jata Hai Gum Noor Ka Le Kar Anchal
Chandani Raat Mein Mehtab Ka Hum-Rang Kanwal


Jalwa-e-Toor Mein Jaise Yad-Baiza-e-Kaleem
Mouja-e-Nukhat-e-Gulzar Mein Ghunche Ki Shamim


Hai Tere Seel-e-Mohabbat Mein Tunhi Dil Mera


Tu Jo Mehfil Hai To Hangama-e-Mehfil Hun Mein
Husn Ki Barq Hai Tu, Ishq Ka Hasil Hun Mein


Tu Sehar Hai To Mere Ashk Hain Shabnam Teri
Sham-e-Ghurbat Hun Agar Main To Shafaq Tu Meri

 

Mere Dil Mein Teri Zulfon Ki Preshani Hai
Teri Tasveer Se Paida Meri Herani Hai


Husn Kamil Hai Tera, Ishq Hai Kamil Mera


Hai Mere Bagh-e-Sukhan Ke Liye Tu Baad-e-Bahar
Mere Betaab Takhiyyul Ko Diya Tu Ne Qarar

 

Jab Se Abad Tera Ishq Huwa Seene Mein
Naye Jouhar Huwe Paida Mere Aaeene Mein

 

Husn Se Ishq Ki Fitrat Ko Hai Tehreek-e-Kamal
Tujh Se Sar-Sabz Huwe Mer Umeedon Ke Nihal


Qafla Ho Gya Asuda-e-Manzil Mera

My caravan has reached its destination.

 

IIS Logo

www.DervishOnline.com

 

 

IQBAL DEMYSTIFIED - ANDROID APP