Menu

Content

Breadcrumb

A+ A A-

بلال

 


چمک اٹھا جو ستارہ ترے مقدر کا
حبش سے تجھ کو اٹھا کر حجاز ميں لايا
ہوئی اسی سے ترے غم کدے کی آبادی
تری غلامی کے صدقے ہزار آزادی
وہ آستاں نہ چھٹا تجھ سے ايک دم کے ليے
کسی کے شوق ميں تو نے مزے ستم کے ليے

جفا جو عشق ميں ہوتی ہے وہ جفا ہی نہيں
ستم نہ ہو تو محبت ميں کچھ مزا ہی نہيں

نظر تھی صورت سلماں ادا شناس تری
شراب ديد سے بڑھتی تھی اور پياس تری
تجھے نظارے کا مثل کليم سودا تھا
اويس طاقت ديدار کو ترستا تھا
مدينہ تيری نگاہوں کا نور تھا گويا
ترے ليے تو يہ صحرا ہی طور تھا گويا
تری نظر کو رہی ديد ميں بھی حسرت ديد
خنک دلے کہ تپيد و دمے نيا سائيد
گری وہ برق تری جان ناشکيبا پر
کہ خندہ زن تری ظلمت تھی دستِ موسی پر

تپش ز شعلہ گر فتند و بر دل تو زدند
چہ برق جلوہ بخاشاک حاصل تو زدند

ادائے ديد سراپا نياز تھی تيری
کسی کو ديکھتے رہنا نماز تھی تيری
اذاں ازل سے ترے عشق کا ترانہ بنی
نماز اس کے نظارے کا اک بہانہ بنی

خوشا وہ وقت کہ يثرب مقام تھا اس کا
خوشا وہ دور کہ ديدار عام تھا اس کا

 

-----------

 

Transliteration

 

Bilal (R.A.)
Chamak Utha Jo Sitara Tere Muqaddar Ka

Habash Se Tujh Ko Utha Kar Hijaz Laya

Huwi Issi Se Tere Ghumkade Ki Abadi
Teri Ghulami Ke Sadqe Hazar Azadi


Woh Astan Na Chuta Tujh Se Aik Dam Ke Liye
Kisi Ke Shauq Men Tu Ne Maze Sitam Ke Liye


Jafa Jo Ishq Mein Hoti Hai Woh Jafa Hi Nahin
Sitam Na Ho To Mohabbat Mein Kuch Maza Hi Nahin


Nazar Thi Soorat-e-Salman (R.A.) Ada Shanas Teri
Sharab-e-Deed Se Bharti Thi Aur Piyas Teri

 

Tujhe Nazare Ka Misl-e-Kaleem(A.S.) Souda Tha
Awais (R.A.) Taqat-e-Deedar Ko Tarasta Tha



 

 

Madina Teri Nigahon Ka Noor Tha Goya
Tere Liye To Ye Sehra Hi Toor Tha Goya

 

Teri Nazar Ko Rahi Deed Mein Bhi Hasrat-e-Deed
Khunak Dile Ke Tapedo Dame Naya Saeeyd




Gari Woh Barq Teri Jaan-e-Nashakaiba Par
Ke Khandazan Teri Zulmat Thi Dast-e-Musa Par


Tapish Za Shaola Griftand Wa Bar-e-Dil Tozand
Che Barq-e-Jalwa Bakhashak-e-Hasil-e-Tozand!

 

Adaye Deed Sarapa Niaz Thi Teri
Kisi Ko Dekhte Rehna Namaz Thi Teri

 

Azan Azal Se Tere Ishq Ka Tarana Bani
Namaz Uss Ke Nazare Ka Ek Bahana Bani


Khosha Woh Waqt Ke Yasrab-e-Maqam Tha Uss Ka
Khosha Woh Dour Ke Didar Aam Tha Uss Ka

IIS Logo

www.DervishOnline.com

 

 

IQBAL DEMYSTIFIED - ANDROID APP