Menu

Content

Breadcrumb

A+ A A-

رخصت اے بزم جہاں

 

( ماخوذ از ايمرسن)

 



رخصت اے بزم جہاں! سوئے وطن جاتا ہوں ميں
آہ! اس آباد ويرانے ميں گھبراتا ہوں ميں
بسکہ ميں افسردہ دل ہوں ، درخور محفل نہيں
تو مرے قابل نہيں ہے ، ميں ترے قابل نہيں
قيد ہے ، دربار سلطان و شبستان وزير
توڑ کر نکلے گا زنجير طلائی کا اسير
گو بڑی لذت تری ہنگامہ آرائی ميں ہے
اجنبيت سی مگر تيری شناسائی ميں ہے
مدتوں تيرے خود آرائوں سے ہم صحبت رہا
مدتوں بے تاب موج بحر کی صورت رہا
مدتوں بيٹھا ترے ہنگامہ عشرت ميں ميں
روشنی کي جستجو کرتا رہا ظلمت ميں ميں
مدتوں ڈھونڈا کيا نظارۂ گل خار ميں
آہ ، وہ يوسف نہ ہاتھ آيا ترے بازار ميں
چشم حيراں ڈھونڈتی اب اور نظارے کو ہے
آرزو ساحل کی مجھ طوفان کے مارے کو ہے
چھوڑ کر مانند بو تيرا چمن جاتا ہوں ميں
رخصت اے بزم جہاں! سوئے وطن جاتا ہوں ميں
گھر بنايا ہے سکوت دامن کہسار ميں
آہ! يہ لذت کہاں موسيقی گفتار ميں
ہم نشين نرگس شہلا ، رفيق گل ہوں ميں
ہے چمن ميرا وطن ، ہمسايۂ بلبل ہوں ميں
شام کو آواز چشموں کی سلاتی ہے مجھے
صبح فرش سبز سے کوئل جگاتی ہے مجھے
بزم ہستی ميں ہے سب کو محفل آرائی پسند
ہے دل شاعر کو ليکن کنج تنہائی پسند
ہے جنوں مجھ کو کہ گھبراتا ہوں آبادی ميں ميں
ڈھونڈتا پھرتا ہوں کس کو کوہ کی وادی ميں ميں ؟
شوق کس کا سبزہ زاروں ميں پھراتا ہے مجھے
اور چشموں کے کنارے پر سلاتا ہے مجھے؟
طعنہ زن ہے تو کہ شيدا کنج عزلت کا ہوں ميں
ديکھ اے غافل! پيامی بزم قدرت کا ہوں ميں
ہم وطن شمشاد کا ، قمری کا ميں ہم راز ہوں
اس چمن کی خامشی ميں گوش بر آواز ہوں
کچھ جو سنتا ہوں تو اوروں کو سنانے کے ليے
ديکھتا ہوں کچھ تو اوروں کو دکھانے کے ليے
عاشق عزلت ہے دل ، نازاں ہوں اپنے گھر پہ ميں
خندہ زن ہوں مسند دارا و اسکندر پہ ميں
ليٹنا زير شجر رکھتا ہے جادو کا اثر
شام کے تارے پہ جب پڑتی ہو رہ رہ کر نظر

علم کے حيرت کدے ميں ہے کہاں اس کی نمود
گل کی پتی ميں نظر آتا ہے راز ہست و بود

 

-------------

Transliteration

 

Rukhsat Ae Bazm-e-Jahan!
(Makhooz Az Emerson)



Rukhsat Ae Bazm-e-Jahan! Sooye Watan Jata Hun Main
Ah! Iss Abad Weerane Mein Ghabrata Hun Main


Bas Ke Main Afsurda Dil Hun, Dar Khor-e-Mehfil Mehfil Nahin
Tu Mere Qabil Nahin Hai, Main Tere Qabil Nahin 


Qaid Hai Darbar-e-Sultan-o-Shabistan-e-Wazir
Tor Kar Nikle Ga Zanjeer-e-Talai Ka Aseer


Go Bari Lazzat Teri Hangama Arayi Mein Hai
Ajnabiat Si Magar Teri Shanasai Mein Hai


Muddaton Tere Khud Araon Se Hum-Sohbat Raha
Muddaton Betaab Mouj-e-Behr Ki Soorat Raha


Muddaton Baitha Tere Hangama-e-Ishrat Mein Main
Roshani Ki Justujoo Karta Raha Zulmat Mein Main


Muddaton Dhoonda Kiya Nazara-Egul, Khar Mein
Ah, Woh Yousaf Na Hath Aya Tere Bazaar Mein


Chashm-e-Heeran Dhoondti Ab Aur Nazare Ko Hai
Arzu Sahil Ki Mujh Toofan Ke Mare Ko Hai


Chor Kar Manind-e-Bu Tera Chaman Jata Hun Main
Rukhsat Ae Bazm-e-Jahan! Sooye Watan Jata Hun Main


Ghar Banaya Hai Sukoot-e-Daman-e-Kuhsar Mein
Ah! Ye Lazzat Kahan Mausiqi-e-Guftar Mein


Hum-Nasheen-e-Nargis-e-Shehla, Rafeeq-e-Gul Hun Main
Hai Chaman Mera Watan, Humsaya-e-Bulbul Hun Main


Sham Ko Awaz Chashmon Ki Sulati Hai Mujhe
Subah Farsh-e-Sabz Se Ko'el Jagati Hai Mujhe


Bazm-e-Hasti Mein Hai Sub Ko Mehfil Arayi Pasand
Hai Dil-e-Shayar Ko Lekin Kunj Tanhai Pasand


Hai Junoon Mujh Ko Ke Ghabrata Hun Abadi Mein Main
Dhoondta Phirta Hun Kis Ko Koh Ki Wadi Mein Main?


Shauq Kis Ka Sabza Zaron Mein Phirata Hai Mujhe
Aur Chashmon Ke Kinaron Par Sulata Hai Mujhe?


Tanaa Zan Hai Tu Ke Saida Kunj Uzlat Ka Hun Main
Dekh Ae Ghafil! Pyami Bazm-e-Qudrat Ka Hun Main


Hum Watan Shamshad Ka,  Qumri Ka Main Humraaz Hun
Iss Chaman Ki Khamashi Mein Gosh Bar-Awaz Hun


Kuch Jo Sunta Hun To Auron Ko Sunane Ke Liye
Dekhta Hun Kuch To Auron Ko Dikhane Ke Liye


Ashiq-e-Uzlat Hai Dil, Nazan Hun Apne Ghar Pe Main
Khanda-Zan Hun Masnad-e-Dara-o-Iskandar Pe Main


Laitna Zaire-Shajar Rakhta Hai Jadoo Ka Asar
Shaam Ke Tare Pe Jab Parti Ho Reh Reh Kar Nazar


Ilm Ke Hairat-Kade Mein Hai Kahan Iss Ki Namood!
Gul Ki Patti Mein Nazar Ata Hai Raaz-e-Hast-o-Bood

IIS Logo

www.DervishOnline.com

 

 

IQBAL DEMYSTIFIED - ANDROID APP