Menu

Content

Breadcrumb

A+ A A-

پيا م صبح

( ماخوذ از لانگ فيلو)

اجالا جب ہوا رخصت جبين شب کی افشاں کا
نسيم زندگی پيغام لائی صبح خنداں کا
جگايا بلبل رنگيں نوا کو آشيانے ميں
کنارے کھيت کے شانہ ہلايا اس نے دہقاں کا
طلسم ظلمت شب سورۂ والنور سے توڑا
اندھيرے ميں اڑايا تاج زر شمع شبستاں کا
پڑھا خوابيدگان دير پر افسون بيداری
برہمن کو ديا پيغام خورشيد درخشاں کا
ہوئی بام حرم پر آ کے يوں گويا مؤذن سے
نہيں کھٹکا ترے دل ميں نمود مہر تاباں کا؟
پکاری اس طرح ديوار گلشن پر کھڑے ہو کر
چٹک او غنچہ گل! تو مؤذن ہے گلستاں کا
ديا يہ حکم صحرا ميں چلو اے قافلے والو
چمکنے کو ہے جگنو بن کے ہر ذرہ بياباں کا
سوئے گور غريباں جب گئی زندوں کی بستی سے
تو يوں بولی نظارا ديکھ کر شہر خموشاں کا

ابھی آرام سے ليٹے رہو ، ميں پھر بھی آئوں گی
سلادوں گی جہاں کو خواب سے تم کو جگائوں گی

 

--------------

Transliteration

 

Payam-e-Subah
(Makhooz Az Lang Fellow)



Ujala Jab Huwa Rukhsat Jabeen-e-Shab Ki Afshan Ka
Naseem-e-Zindagi Pegham Layi Subah-e-Khandan Ka


Jagaya Bulbul-e-Rangeen Nawa Ko Ashiyane Mein
Kinare Khait Ke Shana Hilaya Uss Ne Dehqan Ka


Tilism-e-Zulmat-e-Shab Surah Wan-Noor Se Tora
Andhere Mein Uraya Taj-e-Zar Shama-e-Shabistan Ka


Parha Khawabidgan-e-Dair Par Afsoon-e-Baidari
Barhman Ko Diya Pegham Khursheed-e-Durakhshan Ka


Huwi Baam-e-Haram Par Aa Key Un Goya Moazzan Se
Nahin Khatka Tere Dil Mein Namood-e-Mehr-e-Taban Ka?


Pukari Iss Tarah Deewar-e-Gulshan Par Khare Ho Kar
Chatak O Ghuncha-e-Gul! Tu Moazzan Hai Gulistan Ka


Diya Ye Hukm Sehra Mein Chalo Ae Qafile Walo!
Chamakne Ko Hai Juggnu Ban Ke Har Zarra Byaban Ka


Sooye Gor-e-Ghareeban Jab Gyi Zindon Ki Basti Se
To Yun Boli Nazara Dekh Kar Sheher-e-Khamoshan Ka


Abhi Aram Se Laite Raho, Main Phir Bhi Aun Gi
Sula Dun Gi Jahan Ko, Khawab Se Tum Ko Jagaun Gi

 

IIS Logo

www.DervishOnline.com

 

 

IQBAL DEMYSTIFIED - ANDROID APP