Menu

Content

Breadcrumb

A+ A A-

ايک پہا ڑ اور گلہری

 

(ماخوذ از ايمرسن)

 

(بچوں کے لئے)

 




کوئی پہاڑ يہ کہتا تھا اک گلہری سے
تجھے ہو شرم تو پانی ميں جا کے ڈوب مرے
ذرا سی چيز ہے ، اس پر غرور ، کيا کہنا
يہ عقل اور يہ سمجھ ، يہ شعور ، کيا کہنا !
خدا کی شان ہے ناچيز چيز بن بيٹھيں
جو بے شعور ہوں يوں باتميز بن بيٹھيں
تری بساط ہے کيا ميری شان کے آگے
زميں ہے پست مری آن بان کے آگے

جو بات مجھ ميں ہے ، تجھ کو وہ ہے نصيب کہاں
بھلا پہاڑ کہاں جانور غريب کہاں

کہا يہ سن کے گلہری نے ، منہ سنبھال ذرا
يہ کچی باتيں ہيں دل سے انھيں نکال ذرا
جو ميں بڑی نہيں تيری طرح تو کيا پروا
نہيں ہے تو بھی تو آخر مری طرح چھوٹا
ہر ايک چيز سے پيدا خدا کی قدرت ہے
کوئی بڑا ، کوئی چھوٹا ، يہ اس کی حکمت ہے
بڑا جہان ميں تجھ کو بنا ديا اس نے
مجھے درخت پہ چڑھنا سکھا ديا اس نے
قدم اٹھانے کی طاقت نہيں ذرا تجھ ميں
نری بڑائی ہے ، خوبی ہے اور کيا تجھ ميں
جو تو بڑا ہے تو مجھ سا ہنر دکھا مجھ کو
يہ چھاليا ہی ذرا توڑ کر دکھا مجھ کو

نہيں ہے چيز نکمی کوئی زمانے ميں
کوئی برا نہيں قدرت کے کارخانے ميں

.............

مشکل الفاظ کے معنی

گلہری: چوہے سے ملتا جلتا جانور، پانی میں ڈوب مرنا: مراد شرم / غیرت سے مر جانا، کیا کہنا: مراد یہ کہ بہت بری بات ہے، شعور: دانائی، سمجھنے کی اہلیت، ناچیز: دلیل، حقیر، چیز بن بیٹھنا: خود کو بڑا سمجھنا، خدا کی شان: بہت عجیب بات ہے، بے شعور: نا سمجھ، باتمیز: تہذیب والا، بساط: حثیت، پست: نیچے یعنی ذلیل، آن بان: شان و شوکت، نصیب کہاں: حاصل نہیں، منہ سنبھالنا: زبان کو قابومیں رکھنا، کچی باتیں: فضول باتیں، دل سے نکالنا: خیال میں نہ لانا، کیا پروا: کوئی فکر نہیں، پیدا: ظاہر، قدم اٹھانا: چلنا، نری: خالی خولی، چھالیا: سپاری کی ڈلی جو کتر کر پان میں رکھتے ہیں، قدرت کا کارخانہ: مراد خدا کی کاریگری اور صنعت کی نشانیاں، 

.............

 

 

TRANSLITERATION


Aik Pahar Aur Gulehri
(Makhooz Az Emerson) - Bachon Ke Liye


Koi Pahar Ye Kehta Tha Ek Gulehri Se
Tujhe Ho Sharam To Pani Mein Ja Ke Doob Maray

Zara Si Cheez Hai, Iss Pe Garoor, Kya Kehna
Ye Aqal Aur Ye Samajh, Ye Shaur, Kya Kehna!



Khuda Ki Shan Hai Na-Cheez, Cheez Ban Baithen
Jo Be-Shaur Hon, Yun Ba-Tameez Ban Baithen


Teri Bisat Hai Kya Meri Shan Ke Aagay
Zameen Hai Passt Meri Aan Baan Ke Aagay


Jo Baat Mujh Mein Hai, Tujh Ko Vo Naseeb Kahan
Bhala Pahar Kahan, Janwar Gareeb Kahan!



Kaha Ye Sun Ke Gulehri Ne, Munh Sambhal Zara
Ye Kachi Baatain Hain Dil Se Inhain Nikal Zara

Jo Mein Bari Nahin Teri Tarah To Kya Parwa
Nahin Hai Tu Bhi To Aakhir Meri Tarah Chotta



Her Aik Cheez Se Paida Khuda Ki Qudrat Hai
Koi Bara, Koi Chotta, Ye Uss Ki Hikmat Hai



Bara Jahan Mein Tujh Ko Bana Diya Uss Ne
Mujhe Darakht Pe Charhna Sikha Diya Uss Ne


Qadam Uthane Ki Takat Nahin Zara Tujh Mein
Niri Barai Hai, Khubi Hai Aur Kya Tujh Mein


Jo Tu Bara Hai To Mujh Sa Hunar Dikha Mujh Ko
Ye Chaliya Hi Zara Tor Ker Dikha Mujh Ko


Nahin Hai Cheez Nakami Koi Zamane Mein
Koi Bura Nahin Qudrat Ke Karkhane Mein

IIS Logo

www.DervishOnline.com

 

 

IQBAL DEMYSTIFIED - ANDROID APP