Menu

Content

Breadcrumb

A+ A A-

روح ارضی آدم کا استقبال کرتی ہے

 

کھول آنکھ ، زميں ديکھ ، فلک ديکھ ، فضا ديکھ
مشرق سے ابھرتے ہوئے سورج کو ذرا ديکھ
اس جلوۂ بے پردہ کو پردوں ميں چھپا ديکھ
ايام جدائی کے ستم ديکھ ، جفا ديکھ

بے تاب نہ ہو معرکۂ بيم و رجا ديکھ

ہيں تيرے تصرف ميں يہ بادل ، يہ گھٹائيں
يہ گنبد افلاک ، يہ خاموش فضائيں
يہ کوہ يہ صحرا ، يہ سمندر يہ ہوائيں
تھيں پيش نظر کل تو فرشتوں کی ادائيں

آئينۂ ايام ميں آج اپنی ادا ديکھ

سمجھے گا زمانہ تری آنکھوں کے اشارے
ديکھيں گے تجھے دور سے گردوں کے ستارے
ناپيد ترے بحر تخيل کے کنارے
پہنچيں گے فلک تک تری آہوں کے شرارے

تعمير خودی کر ، اثر آہ رسا ديکھ

خورشيد جہاں تاب کی ضو تيرے شرر ميں
آباد ہے اک تازہ جہاں تيرے ہنر ميں
جچتے نہيں بخشے ہوئے فردوس نظر ميں
جنت تری پنہاں ہے ترے خون جگر ميں

اے پيکر گل کوشش پيہم کی جزا ديکھ

نالندہ ترے عود کا ہر تار ازل سے
تو جنس محبت کا خريدار ازل سے
تو پير صنم خانۂ اسرار ازل سے
محنت کش و خوں ريز و کم آزار ازل سے

ہے راکب تقدير جہاں تيری رضا ، ديکھ

---------------------------

Translitration

Khol Ankh, Zameen Dekh, Falak Dekh, Faza Dekh
Mashriq Se Ubharte Huwe Suraj Ko Zara Dekh

Iss Jalwa-e-Beparda Ko Pardon Mein Chupa Dekh
Ayyam-e-Judai Ke Sitam Dekh, Jafa Dekh

Betab Na Ho Maarika-e-Beem-o-Rija Dekh!



Hain Tere Tassaruf Mein Ye Badal, Ye Ghataen
Ye Gunbad-e-Aflak, Ye Khamosh Fazaen

Ye Koh Ye Sehra, Ye Sumandar Ye Hawaen
Theen Paish-e-Nazar Kal To Farishton Ki Adaen

Aaeena-e-Ayyam Mein Aaj Apni Ada Dekh!



Samjhe Ga Zamana Teri Ankhon Ke Ishare
Dekhain Ge Tujhe Door Se Gardoon Ke Sitare

Na-Paid Tere Behar-e-Takhiyyul Ke Kinare
Pohanche Ge Falak Tak Teri Aahon Ke Shirare

Tameer-e-Khudi Kar, Asar-e-Aah-e-Rasa Dekh!



Khurshid-e-Jahan Taab Ki Zou Tere Sharar Mein
Abad Hai Ek Taza Jahan Tere Hunar Mein

Jachte Nahin Bakhshe Huwe Firdous Nazar Mein
Jannat Teri Pinhan Hai Tere Khoon-e-Jigar Mein

Ae Paikar-e-Gil Koshish-e-Peham Ki Jaza Dekh!



Nalinda Tere Uood Ka Har Taar Azal Se
Tu Jinse-e-Mohabbat Ka Khireedar Azal Se

Tu Peer-e-Sanam Khana-e-Asrar Azal Se
Mehnat Kash-o-Khoon Raiz-o-Kam Azaar Azal Se

Hai Rakab-e-Taqdeer-e-Jahan Teri Raza, Dekh!

--------------------------

IIS Logo

www.DervishOnline.com

 

 

IQBAL DEMYSTIFIED - ANDROID APP