Menu

Content

Breadcrumb

A+ A A-

لالہ صحرا

 

يہ گنبد مينائی ، يہ عالم تنہائی
مجھ کو تو ڈراتی ہے اس دشت کی پہنائی
بھٹکا ہوا راہی ميں ، بھٹکا ہوا راہی تو
منزل ہے کہاں تيری اے لالۂ صحرائی
خالی ہے کليموں سے يہ کوہ و کمر ورنہ
تو شعلۂ سينائی ، ميں شعلۂ سينائی!
تو شاخ سے کيوں پھوٹا ، ميں شاخ سے کيوں ٹوٹا
اک جذبۂ پيدائی ، اک لذت يکتائی
غواص محبت کا اللہ نگہباں ہو
ہر قطرۂ دريا ميں دريا کی ہے گہرائی
اس موج کے ماتم ميں روتی ہے بھنور کی آنکھ
دريا سے اٹھی ليکن ساحل سے نہ ٹکرائی
ہے گرمی آدم سے ہنگامۂ عالم گرم
سورج بھی تماشائی ، تارے بھی تماشائی
اے باد بيابانی! مجھ کو بھی عنايت ہو
خاموشی و دل سوزی ، سرمستی و رعنائی

--------------------

Translitration

Ye Gunbad-e-Meenai, Ye Alam-e-Tanhai
Mujh Ko To Darati Hai Iss Dasht Ki Pehnayi

Bhatka Huwa Raahi Main, Bhatka Huwa Raahi Tu
Manzil Hai Kahan Teri Ae Lala-e-Sehrayi!

Khali Hai Kaleemon Se Ye Koh-o-Qamar Warna
Tu Shoala-e-Seenayi, Mein Shoala-e-Seenayi!

Tu Shakh Se Kyun Phoota, Main Shakh Se Kyun Toota
Ek Jazba-e-Paidayi, Ek Lazzat-e-Yaktayi!

Ghawwas-e-Mohabbat Ka Allah Nigheban Ho
Har Qatra-e-Darya Mein Darya Ki Hai Gehrayi

Uss Mouj Ke Matam Mein Roti Hai Bhanwar Ki Ankh
Darya Se Uthi Lekin Sahil Se Na Takrayi

Hai Garmi-e-Adam Se Hungama-e-Alam Garam
Sooraj Bhi Tamashayi, Tare Bhi Tamashayi

Ae Bad-e-Biyani! Mujh Ko Bhi Anayat Ho
Khamoshi-o-Dil Souzi, Sar Masti-o-Raanayi!

--------------------------

IIS Logo

www.DervishOnline.com

 

 

IQBAL DEMYSTIFIED - ANDROID APP