Menu

Content

Breadcrumb

A+ A A-

گدائی

 

مے کدے ميں ايک دن اک رند زيرک نے کہا
ہے ہمارے شہر کا والی گدائے بے حيا
تاج پہنايا ہے کس کی بے کلاہی نے اسے
کس کی عريانی نے بخشی ہے اسے زريں قبا
اس کے آب لالہ گوں کی خون دہقاں سے کشيد
تيرے ميرے کھيت کی مٹی ہے اس کی کيميا
اس کے نعمت خانے کی ہر چيز ہے مانگی ہوئی
دينے والا کون ہے ، مرد غريب و بے نوا
مانگنے والا گدا ہے ، صدقہ مانگے يا خراج
کوئی مانے يا نہ مانے ، ميرو سلطاں سب گدا

ماخوذ از انوری

---------------------------------

Translitration

Maikude Mein Aik Din Ek Rind-e-Zeerak Ne Kaha
Hai Humare Shehar Ka Wali Gadaye Be-Haya

Taj Pehnaya Hai Kis Ki Be-Klahi Ne Isse
Kis Ki Uryani Ne Bakhshi Hai Isse Zareen Qaba

Uss Ke Aab-e-Lalagoon Ki Khoon-e-Dehqan Se Kasheed
Tere Mere Khait Ki Mitti Hai Iss Ki Keemiya

Iss Ke Naimat Khane Ki Har Cheez Hai Mangi Huwi
Dene Wala Kon Hai, Mard-e-Ghareeb-o-Be-Nawa

Mangne Wala Gada Hai, Sada Mange Ya Kharaaj
Koi Mane Ya Na Mane, Meer-o-Sultan Sub Gada!

--------------------------

IIS Logo

www.DervishOnline.com

 

 

IQBAL DEMYSTIFIED - ANDROID APP