Menu

Content

Breadcrumb

A+ A A-

جاويد کے نام

 

خودی کے ساز ميں ہے عمر جاوداں کا سراغ
خودی کے سوز سے روشن ہيں امتوں کے چراغ
يہ ايک بات کہ آدم ہے صاحب مقصود
ہزار گونہ فروغ و ہزار گونہ فراغ
ہوئی نہ زاغ ميں پيدا بلند پروازی
خراب کر گئی شاہيں بچے کو صحبت زاغ
حيا نہيں ہے زمانے کی آنکھ ميں باقی
خدا کرے کہ جوانی تری رہے بے داغ
ٹھہر سکا نہ کسی خانقاہ ميں اقبال
کہ ہے ظريف و خوش انديشہ و شگفتہ دماغ

---------------------------

Translitration

Khudi Ke Saaz Mein Hai Umer-e-Javidan Ka Suragh
Khudi Ke Souz Se Roshan Hain Ummaton Ke Charagh

Ye Aik Baat Ke Adam Hai Sahib-e-Maqsood
Hazar Goona Farogh-o-Hazar Goona Faraagh!

Huwi Na Zagh Mein Paida Buland Parwazi
Kharab Kar Gyi Shaheen Bache Ko Sohbat-e-Zagh

Haya Nahin Hai Zamane Ki Ankh Mein Baqi
Khuda Kare Ke Jawani Teri Rahe Be-Dagh

Thehar Saka Na Kisi Khanqah Mein Iqbal
Ke Hai Zareef-o-Khush Andaisha-o-Shugufta Damagh

--------------------------

IIS Logo

www.DervishOnline.com

 

 

IQBAL DEMYSTIFIED - ANDROID APP