فرشتوںکاگيت

 

عقل ہے بے زمام ابھی ، عشق ہے بے مقام ابھی
نقش گر ، ازل! ترا نقش ہے نا تمام ابھی
خلق خدا کی گھات ميں رند و فقيہ و مير و پير
تيرے جہاں ميں ہے وہی گردش صبح و شام ابھی
تيرے امير مال مست ، تيرے فقير حال مست
بندہ ہے کوچہ گرد ابھی ، خواجہ بلند بام ابھی
دانش و دين و علم و فن بندگی ہوس تمام
عشق گرہ کشاے کا فيض نہيں ہے عام ابھی
جوہر زندگی ہے عشق ، جوہر عشق ہے خودی
آہ کہ ہے يہ تيغ تيز پردگی نيام ابھی

-----------------------

Translitration


Aqal Hai Be Zamam Abhi, Ishq Hai Be Maqam Abhi
Naqsh Gar-e-Azal! Tera Naqsh Hai Natamam Abhi

Khalq-e-Khuda Ki Ghaat Mein Rindon-o-Faqeeh-o-Meer-o-Peer
Tere Jahan Mein Hai Wohi Gardish-e-Subah-o-Sham Abhi

Tere Ameer Maal Mast, Tere Faqeer Haal Mast
Banda Hai Koocha Gard Abhi, Khawaja Buland Baam Abhi

Danish-e-Deen-o-Ilm-o-Fan Bandagi-e-Hawas Tamam
Ishq-e-Garah Kushaye Ka Faiz Nahin Hai Aam Abhi

Johar-e-Zindagi Hai Ishq, Johar-e-Ishq Hai Khudi
Aah Ke Hai Ye Taegh-e-Taiz Pardagi-e-Nayam Abhi !

--------------------------



فرمان خدا

- فرشتوں سے -

اٹھو ! مری دنيا کے غريبوں کو جگا دو
کاخ امرا کے در و ديوار ہلا دو
گرماؤ غلاموں کا لہو سوز يقيں سے
کنجشک فرومايہ کو شاہيں سے لڑا دو
سلطانی جمہور کا آتا ہے زمانہ
جو نقش کہن تم کو نظر آئے ، مٹا دو
جس کھيت سے دہقاں کو ميسر نہيں روزی
اس کھيت کے ہر خوشہ گندم کو جلا دو
کيوں خالق و مخلوق ميں حائل رہيں پردے
پيران کليسا کو کليسا سے اٹھا دو
حق را بسجودے ، صنماں را بطوافے
بہتر ہے چراغ حرم و دير بجھا دو
ميں ناخوش و بيزار ہوں مرمر کي سلوں سے
ميرے ليے مٹی کا حرم اور بنا دو
تہذيب نوی کارگہ شيشہ گراں ہے
آداب جنوں شاعر مشرق کو سکھا دو

------------------------

Translitration

Utho! Meri Dunya Ke Ghareebo Ko Jaga Do
Kakh-e-Umra Ke Dar-o-Diwar Hila Do

Garmao Ghulamon Ka Lahoo Souz-e-Yaqeen Se
Kunjishik-e-Firomaya Ko Shaheen Se Lara Do

Sultani Jamhoor Ka Ata Hai Zamana
Jo Naqsh-e-Kuhan Tum Ko Nazar Aye, Mita Do

Jis Khait Se Dehqan Ko Mayassar Nahin Rozi
Uss Khait Ke Har Khausha-e-Gandum Ko Jala Do

Kyun Khaliq-o-Makhlooq  Mein Hayal Rahain Parde
Peeran-e-Kalisa Ko Kalisa Se Utha Do

Haq Ra Ba-Sujoode, Sanamaan Ra Ba-Tawafe
Behter Hai Charagh-e-Haram-o-Dair Bujha Do

Main Na Khush-o-Bezar Hun Mar Mar Ki Silon Se
Mere Liye Mitti Ka Haram Aur Bana Do

Tehzeeb-e-Nawi Kargah-e-Shisha Garan Hai
Adaab-e-Junoon Shayar-e-Mashriq Ko Sikha Do!

--------------------------