Menu

Content

Breadcrumb

A+ A A-

تھا جہاں مدرسہ شيری و شاہنشاہی


تھا جہاں مدرسہ شيری و شاہنشاہی
آج ان خانقہوں ميں ہے فقط روباہی
نظر آئی نہ مجھے قافلہ سالاروں ميں
وہ شبانی کہ ہے تمہيد کليم اللہی
لذت نغمہ کہاں مرغ خوش الحاں کے ليے
آہ ، اس باغ ميں کرتا ہے نفس کوتاہی
ايک سرمستی و حيرت ہے سراپا تاريک
ايک سرمستی و حيرت ہے تمام آگاہی
صفت برق چمکتا ہے مرا فکر بلند
کہ بھٹکتے نہ پھريں ظلمت شب ميں راہی

---------------------------

Translitration

Tha Jahan Madrasa-e-Sheri-o-Shehanshahi
Aaj Un Khanqahon Mein Hai Faqt Rubahi

Nazar Ayi Na Mujhe Qafla Salaron Mein
Woh Shabani Ke Hai Tamheed-e-Kaleem-Ullahi

Lazzat-e-Naghma Kahan Murg-e-Khush Alhan Ke Liye
Aah, Iss Bagh Mein Karta Hai Nafas Kotahi

Aik Sar Masti-o-Hairat Hai Sarapa Tareek
Aik Sar Masti-o-Hairat Hai Tamam Agahi

Sifat-e-Barq Chamakta Hai Mera Fikr-e-Buland
Ke Bhatakte Na Phirain Zulmat-e-Shab Mein Raahi

--------------------------------------

IIS Logo

www.DervishOnline.com

 

 

IQBAL DEMYSTIFIED - ANDROID APP