Menu

Content

Breadcrumb

A+ A A-

حادثہ وہ جو ابھی پردہ افلاک ميں ہے


حادثہ وہ جو ابھی پردہ افلاک ميں ہے
عکس اس کا مرے آئينہ ادراک ميں ہے
نہ ستارے ميں ہے ، نے گردش افلاک ميں ہے
تيری تقدير مرے نالہ بے باک ميں ہے
يا مری آہ ميں کوئی شرر زندہ نہيں
يا ذرا نم ابھی تيرے خس و خاشاک ميں ہے
کيا عجب ميری نوا ہائے سحر گاہی سے
زندہ ہو جائے وہ آتش کہ تری خاک ميں ہے
توڑ ڈالے گی يہی خاک طلسم شب و روز
گرچہ الجھی ہوئی تقدير کے پيچاک ميں ہے

---------------------------



Translitration

Hadsa Woh Jo Abhi Parda-e-Aflak Mein Hai
Aks Uss Ka Mere Aaeena-e-Idraak Mein Hai

Na Sitare Mein Hai, Ne Gardish-e-Aflak Mein Hai
Teri Taqdeer Mere Nala-e-Bebaak Mein Hai

Ya Meri Aah Mein Koi Sharar-e-Zinda Nahin
Ya Zara Nam Abhi Tere Khs-o-Khashak Mein Hai

Kya Ajab Meri Nawa Haye Sehargahi Se
Zinda Ho Jaye Woh Atish Ke Teri Khak Mein Hai

Tor Dale Gi Yehi Khak Tilism-e-Shab-o-Roz
Gharche Uljhi Huwi Taqdeer Ke Paichaak Mein Hai

--------------------------------------

IIS Logo

www.DervishOnline.com

 

 

IQBAL DEMYSTIFIED - ANDROID APP