Menu

Content

Breadcrumb

A+ A A-

ڈھونڈ رہا ہے فرنگ عيش جہاں کا دوام

فرانس ميں    لکھے گئے

ڈھونڈ رہا ہے فرنگ عيش جہاں کا دوام


ڈھونڈ رہا ہے فرنگ عيش جہاں کا دوام
وائے تمنائے خام ، وائے تمنائے خام!
پير حرم نے کہا سن کے مری روئداد
پختہ ہے تيری فغاں ، اب نہ اسے دل ميں تھام
تھا ارنی گو کليم ، ميں ارنی گو نہيں
اس کو تقاضا روا ، مجھ پہ تقاضا حرام
گرچہ ہے افشائے راز ، اہل نظر کی فغاں
ہو نہيں سکتا کبھی شيوہ رندانہ عام
حلقہ صوفی ميں ذکر ، بے نم و بے سوز و ساز
ميں بھي رہا تشنہ کام ، تو بھی رہا تشنہ کام
عشق تری انتہا ، عشق مری انتہا
تو بھی ابھی ناتمام ، ميں بھی ابھی ناتمام
آہ کہ کھويا گيا تجھ سے فقيری کا راز
ورنہ ہے مال فقير سلطنت روم و شام

-----------------------


Translitration

Dhoond Raha Hai Farang Aysh-e-Jahan Ka Dawam
Waye Tamana-e-Kham, Waye Tamana-e-Kham !

Peer-e-Haram Ne Kaha Sun Ke Meri Ruedad
Pukhta Hai Teri Faghan, Ab Na Isse Dil Mein Thaam

Tha Arini Go Kaleem, Main Arini Go Nahin
Uss Ko Taqaza Rawa, Mujh Pe Taqaza Haraam

Gharche Hai Afsaye Raaz, Ahl-e-Nazar Ki Fagahan
Ho Nahin Sakta Kabhi Shewa-e-Rindana Aam

Halqa-e-Sufi Mein Zikr, Benam-o-Besouz-o-Saaz
Main Bhi Raha Tashna Kaam, Tub Hi Raha Tashna Kaam

Ishq Teri Intaha, Ishq Meri Intaha
Tu Bhi Abhi Na-Tamam, Main Bhi Abhi Na-Tamam

Aah Ke Khoya Gya Tujh Se Faqeeri Ka Raaz
Warna Hai Maal-e-Faqeer Saltanat-e-Rome-o-Sham

--------------------------------------

IIS Logo

www.DervishOnline.com

 

 

IQBAL DEMYSTIFIED - ANDROID APP