Menu

Content

Breadcrumb

A+ A A-

عشق سے پيدا نوائے زندگی ميں زير و بم


عشق سے پيدا نوائے زندگی ميں زير و بم
عشق سے مٹی کی تصويروں ميں سوز وم بہ دم
آدمی کے ريشے ريشے ميں سما جاتا ہے عشق
شاخ گل ميں جس طرح باد سحر گاہی کا نم
اپنے رازق کو نہ پہچانے تو محتاج ملوک
اور پہچانے تو ہيں تيرے گدا دارا و جم
دل کی آزادی شہنشاہی ، شکم سامان موت
فيصلہ تيرا ترے ہاتھوں ميں ہے ، دل يا شکم!
اے مسلماں! اپنے دل سے پوچھ ، ملا سے نہ پوچھ
ہوگيا اللہ کے بندوں سے کيوں خالی حرم

---------------------------

Translitration

Ishq Se Paida Nawa’ay Zindagi Mein Zeer-O-Bamm
Ishq Se Mitti Ki Tasweer Mein Soz-E-Dam Ba Dam

Admi Ke Raishe Raishe Mein Sama Jata Hai Ishq
Shakh-E-Gul Mein Jis Tarah Bad-E-Sahar Gahi Ka Namm

Apne Razzaq Ko Na Pehchane To Mohtaj-E-Mulook
Aur Pehchane To Tera Gada Dara-O-Jamm

Apne Razzaq Ko Na Pehchane To Mohtaj-E-Mulook
Aur Pehchane To Tera Gada Dara-O-Jamm

Ae Muslaman ! Apne Dil Se Puch, Mullah Se Na Puch
Ho Gya Allah Ke Bandon Se Kyun Khali Haram

-------------------------

IIS Logo

www.DervishOnline.com

 

 

IQBAL DEMYSTIFIED - ANDROID APP