Menu

Content

Breadcrumb

A+ A A-

عالم آب و خاک و باد! سر عياں ہے تو کہ ميں


عالم آب و خاک و باد! سر عياں ہے تو کہ ميں
وہ جو نظر سے ہے نہاں ، اس کا جہاں ہے تو کہ ميں
وہ شب درد و سوز و غم ، کہتے ہيں زندگی جسے
اس کی سحر ہے تو کہ ميں ، اس کی اذاں ہے تو کہ ميں
کس کی نمود کے ليے شام و سحر ہيں گرم سير
شانہ روزگار پر بار گراں ہے تو کہ ميں
تو کف خاک و بے بصر ، ميں کف خاک و خودنگر
کشت وجود کے ليے آب رواں ہے تو کہ ميں

-----------------------

Translitration

Alam-e-Aab-o-Khaak-o-Baad ! Sirr-e-Ayaan Hai Tu Ke Main
Woh Jo Nazar Se Hai Nahan, Uss Ka Jahan Hai Tu Ke Main


Woh Shab-e-Dard-o-Souz-o-Gham, Kehte Hain Zindagi Jise
Uss Ki Sahar Hai Tu Ke Main, Uss Ki Azaan Hai Tu Ke Main


Kis Ki Namood Ke Liye Shaam-o-Sahar Hain Garam-e-Sair
Shana’ay Rozgar Par Bar-e-Garan Hai Tu Ke Main



Tu Kaf-e-Khaak-o-Bebasar, Main Kaf-e-Khaak-o-Khud Nigar
Kisht-e-Wujood Ke Liye Aab-e-Rawan Hai Tu Ke Main

--------------------------------

IIS Logo

www.DervishOnline.com

 

 

IQBAL DEMYSTIFIED - ANDROID APP