Menu

Content

Breadcrumb

A+ A A-

تصوير و مصور

 

 

 

 

تصوير

کہا تصوير نے تصوير گر سے
نمائش ہے مري تيرے ہنر سے
وليکن کس قدر نا منصفي ہے
کہ تو پوشيدہ ہو ميري نظر سے!


مصور

گراں ہے چشم بينا ديدہ ور پر
جہاں بيني سے کيا گزري شرر پر!
نظر ، درد و غم و سوز و تب و تاب
تو اے ناداں، قناعت کر خبر پر


تصوير

خبر، عقل و خرد کي ناتواني
نظر، دل کي حيات جاوداني
نہيں ہے اس زمانے کي تگ و تاز
سزاوار حديث 'لن تراني'


مصور

تو ہے ميرے کمالات ہنر سے
نہ ہو نوميد اپنے نقش گر سے
مرے ديدار کي ہے اک يہي شرط
کہ تو پنہاں نہ ہو اپني نظر سے

------------

Transliteration

 

Tasveer-o-Musawwar

 Tasveer

 Kaha Tasveer Ne Tasweer Gar Se

 Numaish Hai Meri Tere Hunar Se

 

Wa Lekin Kis Qaddar Na-Munsafi Hai

 Ke Tu Poshida Ho Meri Nazar Se!

 

 Musawwar

 Garan Hai Chasm-E-Bina Didah Wer Par

 Jahan Beeni Se Kya Guzri Sharar Par!

 

Nazar Dard-o-Gham-o-Souz-o-Tab-o-Taab

 

Tu Ae Nadan, Qana’at Kar Khabar Par

 

Tasveer 
 

Khabar, Aqal-o-Kirad Ki Natawani

 Nazar, Dil Ki Hayat Javedani

 

 

Nahin Hai Iss Zamane Ki Tag-o-Taaz

 Sazawar-e-Hadees-e-'Lan Tarani'

 Musawwar

 

Tu Hai Mere Kamalat-e-Hunar Se

Na Ho Naumeed Apne Naqsh Gar Se

 

Mere Didar Ki Hai Ek Yehi Sharat

Ke Tu Pinhan Na Ho Apni Nazar Se

 

 

 

 

 

 

 

IIS Logo

www.DervishOnline.com

 

 

IQBAL DEMYSTIFIED - ANDROID APP